متحدہ عرب امارات نے اسرائیل سے مکمل سفارتی تعلقات استوار کرنے کا کیا فیصلہ

متحدہ عرب امارات نے اسرائیل سے مکمل سفارتی تعلقات استوار کرنے کا کیا فیصلہ
یو اے ای، اسرائیل، امریکہ

امریکہ کی مدد سے متحدہ عرب امارات نے اسرائیل کے ساتھ تعلقات استوار کر لئے۔ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے دیگر عرب ممالک کے بھی اسرائیل سے تعلقات بحال ہونے کی امید ظاہر کی۔

واشنگٹن: امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اپنے ٹویٹر ہینڈل سے یو اے ای اور اسرائیل کے درمیان سفارتی تعلقات استوار کرنے کی اطلاع دی ہے۔ متحدہ عرب امارات نے اسرائیل سے مکمل سفارتی تعلقات استوار کرنے کا اب فیصلہ کرلیا ہے۔

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے ایک ٹوئیٹ کے ذریعہ اعلان کرتے ہوئے اسے تاریخی واقعہ قراردیا ہے۔ اب متحدہ عرب امارات وہ پہلا خلیجی ملک قرار دیا جائے گا جس نے ایک طویل عرصہ سے اسرائیل کے ساتھ خفیہ تعلقات رکھنے کے بعد اب اسرائیل کے ساتھ سبھی طرح کے رشتوں کا اعلان کردیا ہے۔

ٹرمپ نے دیگر عرب ممالک کے بھی اسرائیل سے تعلقات بحال ہونے کی امید ظاہر کی ہے۔ ٹرمپ نے کہا ہے کہ چونکہ عرب امارات اور اسرائیل کے مابین تعلقات استوار ہو گئے ہیں تو وہ امید کرتے ہیں کہ جلد ہی دیگر عرب ممالک بھی اسرائیل کے ساتھ معاہدہ کرکے اسے تسلیم کرلیں گے۔

تعلقات کے ممکنہ اثرات

صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اپنی ٹویٹ میں یہ بھی کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات نے اسرائیل کے ذریعہ مغربی کنارے اور وادی اردن کو ضم نہ کرنے کے معاہدے کے طور پر اسرائیل کو تسلیم کرلیا ہے۔ خبر رساں ایجنسی ’رائٹرز‘ کے مطابق یہ معاہدہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے تعاون سے ہوا ہے۔

اس معاہدے کے بعد اسرائیل مقبوضہ غرب اردن کے مزید علاقے اسرائیل میں ضم کرنے کے منصوبے کو معطل کر دے گا۔ قابل ذکر ہے کہ حماس نے اس کے بارے میں پہلے ہی خبردار کردیا تھا۔ حماس کا کہنا تھا کہ اسرائیل مغربی کنارے اور وادی اردن کو ضم نہ کرنے کے بہانے عرب ممالک کو صیہونی ریاست کے ساتھ رشتے کو اعلانیہ طور پر تسلیم کرنے کے لئے راضی کرسکتا ہے۔

ٹرمپ کے ٹویٹر پر اعلان کے فورا بعد متحدہ عرب امارات اور اسرائیل نے مشترکہ بیان جاری کیا۔ بیان میں کہا گیاہے کہ دونوں ممالک کے وفود جلد ہی براہ راست پرواز، سیکورٹی، مواصلات، توانائی، سیاحت اور حفظان صحت کے شعبے میں باہمی معاہدے کے لئے ایک دوسرے ممالک کا دورہ کریں گے۔ واضح رہے کہ عرب ملکوں میں مصر او اردن کے اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات ہیں۔

[ہمس لائیو]

تعارف: Hams News Staff

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*