بنگلہ دیش کے وزیر برائے مذہبی امور شیخ محمد عبداللہ کا انتقال

مسٹر عبد اللہ کو صبح قریب ساڑھے دس بجے اپنے بیلی روڈ کے گھر پر دل کا دورہ پڑا، جس کے بعد انہیں اسپتال لایا گیا جہاں علاج کے دوران ان کی موت ہوگئی۔

ڈھاکہ: بنگلہ دیش کے مذہبی امور کے ریاستی وزیر شیخ محمد عبداللہ ہفتہ کی دیر رات انتقال کر گئے۔

مسٹر عبداللہ کے پرسنل سیکرٹری کھانڈیکر یاسر عرفات نے بتایا کہ ان کا سنیچر کی رات 11 بجکر 45 منٹ پر ڈھاکہ کے جوائنٹ ملیٹری اسپتال میں علاج کے دوران انتقال ہوگیا۔ وہ 74 برس کے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ مسٹر عبداللہ کو دل کا دورہ پڑا تھا۔

وزارت کے ایک افسر نے بتایا کہ مسٹر عبد اللہ کو صبح قریب ساڑھے دس بجے اپنے بیلی روڈ کے گھر پر دل کا دورہ پڑا، جس کے بعد انہیں اسپتال لایا گیا جہاں علاج کے دوران ان کی موت ہوگئی۔

مسٹر عبداللہ نے گوپال گنج – 3 انتخابی حلقے میں وزیراعظم شیخ حسینہ کے پارلیمانی نمائندے کے طور پر کئی بار خدمات انجام دینے کے بعد 2018 کے انتخابات کے بعد ریاستی وزیر کے طور پر مذہبی امور کی وزارت کی ذمہ داری سنبھالی تھی۔

صدر محمد عبدالحمید اور وزیر اعظم شیخ حسینہ نے ان کی وفات پر غم کا اظہار کیا ہے۔

8ستمبر 1945 کو گوپال گنج کے کیکنیا میں پیدا ہوئے عبداللہ شیخ محمد مطیع الرحمان اور رابعہ خاتون کے ساتھ بچوں میں تیسرے نمبر پر تھے۔ انہوں نے 1966 میں کھلنا کے اعظم خاں کالج سے بی کام کی تعلیم حاصل کی اور بنگلہ دیش کی آزادی کے بعد ڈھاکہ یونیورسٹی سے ایم کام اور ایم اے کی ڈگری حاصل کی۔ انہوں نے ایل ایل بی کی ڈگری بھی لی تھی۔

تعارف: hamslive

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*