دو ماہ سے مودی اور ٹرمپ کے مابین کوئی رابطہ نہیں

نئی دہلی: ہندوستان نے یہ واضح کر دیا کہ ہندوستان چین سرحد تنازعہ کے سلسلے میں وزیراعظم نریندر مودی اور امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان کوئی بات چیت نہیں ہوئی ہے۔ اس مسئلے پر ہندوستان براہ راست چین کے سفیر اور دیگر موجودہ نظام کے ذریعہ سے مسلسل رابطے میں ہے۔

سرکاری ذرائع نے یہاں کہا کہ مسٹر مودی اور صدر ٹرمپ کے درمیان حال ہی میں کوئی رابطہ نہیں ہوا ہے۔دونوں لیڈروں کے درمیان بات چیت گزشتہ چار اپریل کو ہائیڈروکسی کلوروکوئن کی سپلائی کے سلسلے میں ہوئی تھی۔

وزارت خارجہ نے یہ بھی کہا کہ حقیقی کنٹرول لائن کے سلسلے میں جاری تنازع کے حل کے لئے ہندوستان براہ راست چین کے سفیر اور دیگر موجودہ نظام کے ذریعہ سے مسلسل رابطے میں ہے۔

امریکی صدر مسٹر ٹرمپ نے ہندوستان اور چین کے درمیان ثالثی کرنے کی پیش کش کی ہے۔ مسٹر ٹرمپ نے کل وائٹ ہاؤس میں ایک پریس بریفنگ میں کہا کہ انہوں نے وزیراعظم مسٹر مودی سے بات کی ہے اور چین کے سلسلے میں جو بھی ہو رہا ہے، اس سے ان کا موڈ اچھا نہیں ہے۔ ہندوستان اور چین دو بڑے ملک ہیں اور دونوں کے پاس طاقت ور افواج ہیں۔

انہوں نے ہندوستان اور چین کے درمیان ثالثی کی تجویز کے سلسلے میں پوچھے جانے پر کہا کہ اگر دونوں ملک محسوس کرتے ہیں کہ اس سے انہیں مدد ملےگی تو وہ ثالثی کرنے پر غور کریں گے۔

[یو این آئی]

تعارف: hamslive

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*