دوسری عالمی جنگ کے بعد دنیا کے لئے کورونا وائرس سب سے بڑا چیلنج: گٹیرس

اقوام متحدہ: اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گٹیرس نے کورونا وائرس (کووڈ -19) کو دوسری عالمی جنگ کے بعد دنیا کے لئے سب سے بڑا چیلنج قرار دیتے ہوئے اس کی وجہ سے ہونے والے اقتصادی بحران کے سلسلہ میں اقوام عالم کوآگاہ کیا۔

مسٹر گٹیرس نے منگل کو نیویارک میں اقوام متحدہ کے ہیڈ کوارٹر میں کورونا وائرس سے دنیا پر پڑنے والے سماجی اور اقتصادی اثرات سے متعلق ایک رپورٹ کو جاری کرتے ہوئے یہ بات کہی۔

انہوں نے کہا ”کورونا وائرس (کووڈ -19) وبا کا مختلف سماجی طبقات پر سنگین اثر پڑ رہا ہے جس کی وجہ سے لوگ مر رہے ہیں اور ان کی روزی روٹی ختم ہو رہی ہے۔ اقوام متحدہ کے قیام کے بعد کووڈ -19 اب تک کا سب سے بڑا چیلنج ہے جس کا ہم سب سامنا کر رہے ہیں“۔

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے تمام ممالک پر مشتمل صحت کے شعبہ میں تعاون کے ساتھ کام کر کے اس وبا کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکنے اور اسے ختم کرنے کی بھی اپیل کی ہے۔

مسٹر گٹیرس نے صنعتی طور پر ترقی یافتہ ممالک سے ترقی پذیر ممالک کی مدد کرنے کی اپیل کی ہے۔

اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق کورونا وائرس کے پھیلنے کی وجہ سے دنیا بھر میں دو کروڑ 50 لاکھ روزگار جا سکتی ہے۔ اس کے علاوہ براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں بھی 40 فیصد تک کی گراوٹ آ سکتی ہے۔

(یواین آئی)